کتاب: سہہ ماہی مجلہ البیان کراچی - صفحہ 34

3-مخصوص صفات کا جانور طلب کرنا مثلاً یہ کہ سیاہ رنگ کا جانور غیر اللہ کے نام پر ذبح کریں پھر اس ذبح شدہ جانور کے خون کو مریض کے جسم پر ملے یا پھر اس ذبح شدہ جانور کو غیرآباد جگہ پھینکنے کا کہے ۔ 4-طلسمات کا لکھنا جس میں کبھی تیر، حروف مقطعات، برجوں کی شکلیںیا ستاروں کے نام لکھے ہوئے ہوں۔ 5-علاج کے وقت ابتدا میں قر آن کی تلاوت کرنامگر پھر دوران علاج نامعلوم اور سمجھ میں نہ آنے والے جملوں کا اس طرح وردکرنا کہ مسحور کو ان کی سمجھ نہ آئے۔ 6-مسحور کو کہنا کہ خاص مدت تک لوگوں سے الگ تھلگ ایسے مقام یا کمرے میں رہے جہاں سورج کی روشنی تک نہ آنے پائے۔ 7-مسحور کو کہنا کہ مخصوص مدت تک پانی نہ چھوئے اور گندہ رہے، نیز مسحور کو کہنا کہ گلے میں صلیب لٹکا کر رکھے، صلیب لٹکانے کا کہنا اس بات کی علامت ہےکہ اس جادو گر کا موکل جن عیسائی ہے۔ 8-مریض کو کچھ چیزیں دے کر کہنا کہ انہیں زمین میں جاکر دفن کردے۔ 9-مریض کو کچھ اور اق دے کر کہناکہ انہیںجلاکر راکھ کردے ۔ 10-مسحور کو نقش شدہ برتن دینا اور کہنا کہ ان میں پانی گھول کر پیو کاہن کی علامات 1-کسی نابالغ بچے کوسامنے بٹھا کر اس کے ناخن پر سیاہی لگا دیتے ہیں پھر اس میں مختلف شکلیں دکھانے کا دعوی کر کے لوگوں کو فریب دیا جاتا ہے۔ 2-مریض کے کسی کپڑے کی پیمائش کی جاتی ہے پھر اس کے کم وبیش ہونے کی صورت میں بیماری ، آسیب یا سایہ وغیرہ سے مطلع کیا جاتا ہے۔ 3-پانی دم کر کے پلایا جاتا ہے پھر اس کے ذائقہ کی تبدیلی کے بہانے مختلف بیماریوں یا جن بھوت کے اثر انداز ہونے کا دعوی کیا جاتاہے ۔

  • فونٹ سائز:

    ب ب