کتاب: سہہ ماہی مجلہ البیان کراچی - صفحہ 156

معجزہ ہے۔ مولانا حبیب الرحمان عثمانی مہتمم دار العلوم دیوبند : مولانا ثناء اللہ امرتسری کی تردید قادیانیت کے سلسلہ میں ان کی خدمات کا اعتراف کرتے ہوئے مولانا ثناء اللہ امرتسری سے ایک ملاقات میں فرمایا تھا کہ : ہم لوگ (30)سال تک محنت کریں تو بھی اس(قادیانیت) کے بارے میں آپ کی واقفیت تک نہیں پہنچ سکتے۔  مولانا احمد علی لاہوری رحمہ اللہ : شیخ التفسیر مولانا احمد علی لاہوری رحمہ اللہ فرماتے ہیں : محترم المقام، رئیس المناظرین، الفاضل الاجل، جامع المنقولات والمعقولات المقلب شیر پنجاب، اعنی الحضرۃ مولانا ثناء اللہ کا وجود مسعود اس دور ابتلاء افتان میں مفتتمات میں سے ہے۔ مولانا عبد الماجد دریا آبادی رحمہ اللہ : ہمیں مناظرہ کے کہناچاہیے کہ امام تھے خصوصاً آریہ سماجیوں کے مقابلہ میں اور شروع صدی میں ان کا فتنہ اس وقت سب سے بڑا تھا اگر مولانا ثناء اللہ ان کے سامنے نہ آجاتے تو مسلمانوں کی مظلومانہ مرعوبیت خدا جانے کہاں تک پہنچ جاتی ۔ مولانا محمد ابراہیم میر سیالکوٹی : اگر رات کو کوئی نیا فرفہ دین اسلام کے خلاف وجود میں آجائے تو صبح اُٹھ کر مولانا ثناء اللہ اس کا جواب دے سکتے ہیں ۔ 

  • فونٹ سائز:

    ب ب