کتاب: سہہ ماہی مجلہ البیان کراچی - صفحہ 80

جائیں جوکہ یہ ہیں : { وَنُنَزِّلُ مِنَ الْقُرْآنِ مَا هُوَ شِفَاءٌ وَرَحْمَةٌ لِلْمُؤْمِنِينَ وَلَا يَزِيدُ الظَّالِمِينَ إِلَّا خَسَارًا} [الإسراء: 82] {قُلْ هُوَ لِلَّذِينَ آمَنُوا هُدًى وَشِفَاءٌ} [فصلت: 44] {يَا أَيُّهَا النَّاسُ قَدْ جَاءَتْكُمْ مَوْعِظَةٌ مِنْ رَبِّكُمْ وَشِفَاءٌ لِمَا فِي الصُّدُورِ وَهُدًى وَرَحْمَةٌ لِلْمُؤْمِنِينَ} [يونس: 57] {وَيَشْفِ صُدُورَ قَوْمٍ مُؤْمِنِينَ} [التوبة: 14] { وَإِذَا مَرِضْتُ فَهُوَ يَشْفِينِ} [الشعراء: 80] مسنون دعائیں : ( اَسْئَلُ اللّٰہَ الْعَظِیْمَ رَبَّ الْعَرْشِ الْعَظِیْمِ اَنْ یَّشْفِیَکَ)سات مرتبہ ( اُعِیْذُکَ بِکَلِمَاتِ اللّٰہِ التَّامَّۃِ مِنْ کُلِّ شَیْطَانٍ وَّھَامَّۃٍ وَّمِنْ کُلِّ عَیْنٍ لَّامَّۃٍ )تین مرتبہ (اَللّٰهُمَّ ربَّ النَّاسِ ، أَذْهِب الْبَأسَ ، واشْفِ ، أَنْتَ الشَّافي لا شِفَاءَ إِلاَّ شِفَاؤُكَ ، شِفاءً لا يُغَادِرُ سقَماً) تین مرتبہ (حَسْبِيَ اللّٰهُ لَا إِلٰـهَ إِلَّا هُوَ عَلَيْهِ تَوَكَّلْتُ وَهُوَ رَبُّ الْعَرْشِ الْعَظِيْمِ) سات مرتبہ ( بِسْمِ اللّٰہِ الَّذِی لاَیَضُرُّ مَعَ اسْمِہٖ شَیْئٌ فِی الْاَرْضِ وَلَا فِی السَّمَآئِ وَھُوَ السَّمِیْعُ الْعَلِیْمُ) تین مرتبہ (اَللّٰهُمَّ أَذْهِبْ عَنْهُ حَرَّهَا وَبَرْدَهَا وَوَصَبَهَا) چند ضروی ہدایات : قرآن کریم کی تمام آیات شفا ءاور ہدایت کی نیت سے دم کیا جاسکتاہے ۔ دم کرنے کے نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم سے چند طریقے منقول ہیں جو یہ ہیں ۔ 1: دم پڑھنا اور اس کے ساتھ تھتکارنا ہرآیت کے اختتام پر یا چند آیات کے بعد یا مکمل قراءت کے بعد ۔ 2: تھتکارنے کے بغیر دم کرنا۔ 3: آیات وادعیہ پڑھنا پھر انگلی سےلعاب لیکر اس کو مٹی سے ملاکر تکلیف کی جگہپر ملنا ۔ 4: متاثرہ جگہ پرملنے کے ساتھ دم کرنا۔

  • فونٹ سائز:

    ب ب