کتاب: انوار المصابیح بجواب رکعات تراویح - صفحہ 234

اس لئے اس روایت کو دیکھ کر مولانا مئوی کو بڑا اضطراب لاحق ہوا اور جان چھڑانے کے لئے اس فکر میں پڑے کہ کسی نہ کسی طرح ا س پر کوئی جرح کی جائے ۔ کچھ نہ ملا تو راویوں کے تعبیر و بیان کے تھوڑے سے لفظی اختلاف سے ہی فائدہ اٹھانے کی کوشش کی ۔ اور اسی کو خوب پھیلا کر اور نمایاں کر کے پیش کر دیا او رعوام کو مغالطہ دینے کے لئے یہ دعویٰ کر دیاکہ ’’اصول حدیث کی رو سے یہ روایت مضطرب ہے ‘‘ ۔ (رکعات ص۸) لطف یہ ہے کہ ساتھ ہی ترجیح و تطبیق کی بعض صورتیں بھی نقل کی ہیں ، حالانکہ اصولِ حدیث کا ایک معمولی طالب علم بھی جانتا ہے کہ جو اختلاف ترجیح یہ تطبیق کے ذریعے دو رہو سکتا ہو ا س کو اصطلاحًا اضطراب نہیں کہا جاتا اور نہ وہ

  • فونٹ سائز:

    ب ب