کتاب: عورت کا لباس - صفحہ 108

امام ابن تیمیہ رحمہ اللہ فرماتے ہیں:مسلمان کا،کافر کے لباس سے فرق اختیار کرنا ایک شرعی مطلوب ہے۔ مروذی کی روایت کے مطابق امام احمد بن حنبل رحمہ اللہ سے ایک مخصوص عجمی جوتے کے بارے میں سوال کیاگیاتوآپ نےفرمایا:میں اسے نہیں پہنتا نہ کبھی پہنوں گا،محمد بن ابی حرب کی روایت میں یہ اضافہ بھی منقول ہےکہ امام احمد نے فرمایا: کیونکہ یہ عجمی لباس میں شمارہوتاہے۔ علامہ ابن رجب رحمہ اللہ فرماتے ہیں:عرب کامعروف لباس،عجمیوں کے لباس سے افضل ہے۔ حافظ ابن تیمیہ رحمہ اللہ فرماتے ہیں:اس (قولِ عمر رضی اللہ عنہ ) سےبہت سے علماء نے غیرمسلموں کے لباس کے ناپسندیدہ ہونے کی دلیل لی ہے۔

  • فونٹ سائز:

    ب ب