کتاب: عورت کا لباس - صفحہ 119

وجہِ استدلال منطوقِ حدیث یہ ہے کہ عورت کو،دوسری عورت کی شرمگاہ کی طرف دیکھنے سے منع کردیاگیا ہے،جس سے یہ مفہوم اخذ ہوتاہے کہ ہرعورت،دوسری عورتوں کی نظروں سے اپنی شرمگاہ کی حفاظت کرے،جبکہ گذشتہ صفحات میں ایک حدیث گزر چکی ہے جس کے الفاظ ہیں:(المرأۃ عورۃ)یعنی :عورت پوری کی پوری ستر یعنی شرمگاہ ہے،لہذا اگر کوئی عورت اپنے جسم کے ان حصوں کو دوسری عورتوں یا محرم مردوں کی موجودگی میں ظاہر کرے گی،جنہیں عادۃً ڈھانپا جاتاہے،تو وہ اپنی شرمگاہ کو ظاہر کررہی ہے،جس کی حفاظت کاحکم حدیثِ مذکور میں موجود ہے۔ واضح ہوکہ شرمگاہ کو ڈھانپے رکھنے کےحکم میں شریعت کے بہت سے اغراض ومقاصد ہیں: (۱)شرمگاہ کاکھلارکھنا انتہائی فحش وقباحت کامعاملہ ہے،جیساکہ حدیث میں صراحت موجودہے۔

  • فونٹ سائز:

    ب ب