کتاب: عورت کا لباس - صفحہ 123

سمعت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم یقول: (ما من امرأۃ تخلع ثیابھا فی غیر بیتھا إلا ھتکت ما بینھا وبین اللہ) ترجمہ:ابوالملیح فرماتے ہیں:کچھ شامی عورتیں،ام المؤمنین عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہاکی خدمت میں حاضر ہوئیں،انہوںنے پوچھا:تم کس علاقے سے ہو؟انہوںنے جواب دیا: ہمارا تعلق شام سے ہے،فرمایا:ـشاید تم اس علاقے کی ہوجس کی خواتین بازاری حمام میں جاتی ہیں؟عرض کیا: جی ہاں،تو ام المؤمنین نے فرمایا:میں نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کو یہ فرماتے ہوئے سناہے:جوعورت اپنے گھرکے علاوہ کہیں اپنے کپڑے اتارتی ہےتو وہ اپنے اور اللہ تعالیٰ کے مابین پردۂ حیاء کو تارتارکردیتی ہے۔ وجہِ استدلال عورت کیلئے گھر کے اندر جسم کے کچھ حصوں کو ظاہرکرنا مباح ہے،اس کا یہ

  • فونٹ سائز:

    ب ب