کتاب: عورت کا لباس - صفحہ 182

ایسی لونڈی جسے آپ خریدنا چاہتے ہیں،کو گھٹنے سے نیچے اور ناف سے اوپر دیکھنا جائز ہے۔(یعنی صرف خریدارکیلئے)اس بارہ میں دوسرا قول یہ ہے کہ لونڈی کاخریدار بھی اس کے جسم کا اتنا حصہ ہی دیکھ سکتا ہے جتنا ایک اُس آزاد عورت کا جسے آپ شادی کا پیغام دینا چاہتے ہیں۔ (۴) وہ افرادجن کاستر جسم کے وہ حصہ ہیں جو عرفاً وعادۃً ڈھکے رہتے ہیں۔ (درج ذیل ہیں:) جوانی کی حدود کو چھونے والی لڑکی ،سنِ شعور کو پہنچنے والی بچی، لونڈی (مملوکہ) ام الولد،وہ لونڈی جسے کسی شرط یاصفت کے تحت آزاد کرنا مقصود ہو، وہ لونڈی جسے کسی مخصوص رقم کی ادائیگی کے عقد پر آزاد کرنا مقصود ہویا وہ لونڈی جسے اس کامالک اپنے مرنے کے بعد آزاد ہونے کا قول دے دے۔ یہ تمام عورتیں اجنبی مردوںاور سنِ شعور کو پہنچے ہوئے بچوں کی موجودگی میں اپنے جسم کے ان تمام اعضاء کو ڈھانپے رکھیں گی جو عرفاً وعادۃً پردے میں رہتے ہیں۔ ہرآزاد عورت ،جوانی کی حدود کوپہنچی لڑکی،سن شعور کو پہنچی بچی،اور ایسی لونڈی جو جزوی طور پر آزاد کردی گئی ہے،ان تمام عورتوں کا مکمل جسم ستر ہے، البتہ محرم مردوں، مسلمان یاکافرعورتوں ،اپنے خالص غلاموں یا ایسے غلام جو

  • فونٹ سائز:

    ب ب