کتاب: چہرے اور ہاتھوں کا پردہ - صفحہ 11

کتاب: چہرے اور ہاتھوں کا پردہ مصنف: فضیلۃ الشیخ علی بن عبداللہ النمی پبلیشر: مکتبۃ عبداللہ بن سلام لترجمۃ کتب الاسلام ترجمہ: فضیلۃ الشیخ عبداللہ ناصر رحمانی زیر نظر کتاب علی بن عبداللہ النمی کی تالیف ہے اور اس کا اردو ترجمہ فضیلۃ الشیخ عبداللہ ناصر رحمانی صاحب حفظہ اللہ نے کیا ہے، اس کتاب میں خواتین کے پردے کے حوالے سے سیر حاصل بحث کی گئی ہے، اس میں ایسے تمام شبہات کا تعاقب کیا گیا ہے جن پر ان لوگوں کا اعتماد تھا جو مسلم خاتون کو بے پردگی کی دعوت دینے میں کوشاں و حریص ہیں،کتاب بنیادی طور پر دو ابواب میں منقسم ہے ، ایک باب میں ان شبہات کا جائزہ لیا گیا ہے جو چہرے کے پردے سے متعلق ہیں اور دوسرا باب ہاتھوں کے ڈھانپنے کے وجوب سے متعلق شہبات کے ازالے پر مشتمل ہے۔ تقدیم عبداللہ ناصرالرحمانی الحمد للہ رب العالمین والصلاۃ والسلام علی أشرف الأنبیاء والمرسلین وعلی آلہ وأصحابہ وأھل طاعتہ إلی یوم الدین،أمابعد زیرنظر رسالہ دراصل ایک عربی رسالے کی تفہیم وترجمانی ہے،عربی رسالہ ہمارے فاضل دوست فضیلۃ الشیخ /علی بن عبداللہ النمی حفظہ اللہ کی تصنیف لطیف ہے،جسے انہوں نے (الشہاب فی کشف الشبھات عن الحجاب)کے نام سے موسوم فرمایا ہے، اس نام سے رسالہ کا موضوع واضح ہوجاتا ہے،یعنی مسلم خاتون کے پردے کے حوالے سے جو،کچھ لوگوں نے چہرے اورہاتھوں کے کھلارکھنے کے جواز کا قول اختیار کیا ہے،جو شرعاً، اخلاقاًوعقلاًباطل وناقابلِ فہم ہے،ان لوگوں نے اپنے مؤقف کے اثبات کیلئے کچھ دلائل کا سہارالیا ہے ۔ مؤلف حفظہ اللہ نے ان دلائل کو محض شبہات قرار دیا ہے اور ان کا علمی رد فرمایا ہے۔ رسالۂ ھذاکے بالاستیعاب مطالعہ سے واضح ہوگا کہ مؤلف حفظہ اللہ کاتعاقب انتہائی قوی اورادلۂ کتاب وسنت وآثارِسلف سے مزین ومبرہن ہے۔ اللہ رب العزت کا ہم پراحسانِ عظیم ہے کہ اس نے رسولِ اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی بعثت کے ذریعہ، ہم پر اپنا دین مکمل فرمادیا،ارشاد ہوتاہے: [اَلْيَوْمَ اَكْمَلْتُ لَكُمْ دِيْنَكُمْ وَاَتْمَمْتُ عَلَيْكُمْ نِعْمَتِيْ وَرَضِيْتُ لَكُمُ الْاِسْلَامَ دِيْنًا۝۰ۭ ] المائدۃ:۳ یعنی:آج میں نے تمہارے لئے تمہارادین مکمل کردیاہے اورتم پر (دین کی صورت میں)اپنی نعمت تمام فرمادی اور تمہارے لئے اسلام کو بطورِ دین پسند فرمالیا۔

  • فونٹ سائز:

    ب ب