کتاب: فتنہ وضع حدیث اور موضوع احادیث کی پہچان - صفحہ 56

عامر الشعبی رافضیوں کے امام تھے پھر اس سے تائب ہوئے اس کے بعد فرمایا کہ ’’اگر میں چاہوں کہ وہ لوگ میرے غلام ہو جائیں یا میرے گھر کوسونے سے بھر دیں یامیرے گھر کا طواف کریں بایں عوض کہ میں علی بن ابی طالب کے لئے حدیث وضع کروں تو وہ ضرور ایسا کریں گے مگر اللہ کی قسم میں تو ہر گز یہ نہیں کروں گا‘‘۔ روافض کی طرح خوارج بھی حدیث وضع کرنے میں بیباک تھے۔ ابن لھیعہ کہتے ہیں کہ خوارج کے ایک شخص نے بیان کیا کہ "ان هذه الاحاديث دين فانظروا عمن تاخذون دينكم فانا كنا اذا هو ينا المرسيوناه حديثا 

  • فونٹ سائز:

    ب ب