کتاب: انسان کی عظمت کی حقیقت - صفحہ 104

قال: ایک دیہاتی حضور انور صلی اللہ علیہ وسلم کے پاس ایک گوہ لے کر آیا ……(الی قولہ) جانوروں نے بھی یہ گواہی دی (۱)(ص63-64) مشہور ہے کہ ایک دیہاتی رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے پاس ایک گوہ لایا اور کہنے لگا کہ اگر یہ گوہ کلمہ پڑھے تو میں مسلمان ہونے کے لئے تیار ہوں ۔رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم گوہ سے مخاطب ہوئے تو اس نے کلمہ پڑھ کر آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے سچے نبی ہونے کی تصدیق کر دی اس پروہ دیہاتی بھی مسلمان ہوگیا۔ امام بیہقی فرماتے ہیں کہ سیدہ عائشہ اور ابو ہریرہ رضی اللہ عنہما سے اس طرح کا واقعہ مروی ہے لیکن تمام اسانید ایک جیسی ہونے کی وجہ سے ضعیف ہیں کیونکہ ان اسانید کا دارو مدار علی السلمی پر ہے۔امام ذہبی میزان الاعتدال میں امام بیہقی کا یہ قول نقل کرنے کے بعد فرماتے ہیں : قال البیهقی روی ذلك عن عائشة و ابی هریرة وما ذکرناه هو امثل الاسانید فیه وهو ایضا ضعیف والحمل فیه علی هذا السلمی . امام بیہقی فرماتے ہیں کہ سیدہ عائشہ اور ابو ہریرہ رضی اللہ عنہما سے اس طرح کا واقعہ مروی ہے لیکن تمام اسانید ایک جیسی ہونے کی وجہ سے ضعیف ہیں کیونکہ ان اسانید کا دارو مدار علی السلمی پر ہے۔امام ذہبی میزان الاعتدال میں امام بیہقی کا یہ قول نقل کرنے کے بعد فرماتے ہیں : قال البیهقی روی ذلك عن عائشة و ابی هریرة وما ذکرناه هو امثل الاسانید فیه وهو ایضا ضعیف والحمل فیه علی هذا السلمی . قلت صدق والله البیهقی فانه خبر باطل قلت صدق والله البیهقی فانه خبر باطل میں کہتا ہوں کہ اللہ کی قسم بیہقی نے سچ کہا ہے کیونکہ یہ واقعہ جھوٹا ہے۔ جھوٹے قصے بیان کرکے مخلوق کی کونسی رہنمائی کی جارہی ہے؟مگر کیا کریں کہ اہل معرفت کی دنیا ہی نرالی ہے۔

  • فونٹ سائز:

    ب ب