کتاب: انسان کی عظمت کی حقیقت - صفحہ 37

اس مقام پر ہم اختصار کے ساتھ صانع عالم کی معرفت کی آیتیں اور دلیلیں عرض کرتے ہیں۔ انسان کو یہ معرفت اور یقین ہونا چاہیئے کہ اللہ یکتا ہے اور بے نیاز ہے نہ کسی کا باپ ہے اور نہ کسی کا بیٹا اور نہ ہی کوئی اس کا ہم سر ہے۔ اور کوئی بھی چیز اس جیسی نہیں ہے وہ سنتا اور دیکھتا ہے (یعنی کسی کی ذات یا صفت یا کوئی فعل اللہ کی ذات، صفت اور فعل جیسا نہیں ہو سکتا) اور نہ ہی کوئی اس کے مشابہ ہے۔ اسی طرح کوئی اس کا مددگار ہے نہ شریک، نہ سہارا دینے والا ہے نہ وزیر نہ مد مقابل ہے نہ مشیر اور نہ تو وہ جسم ہے کہ اسے چھوا جا سکے اور نہ ہی وہ جوہر ہے کہ اسے محسوس کیا جا سکے اور نہ عرض ہے کہ ختم ہو سکے۔ مرکب آلہ یا اجزاء کا مجموعہ بھی نہیں ہے۔ نہ ہی اس کی ماہیت ہے اور نہ ہی جدا جدا

  • فونٹ سائز:

    ب ب