کتاب: انسان کی عظمت کی حقیقت - صفحہ 42

ما کان بهٰذه الصفة مما یصدق مرة و یکذب اخری ولا ینبغی ان یوثق بمقدماته ولا بنتائجها الحادثة عنها ولا یجب ان یلتزم فی اخذ البرهان وانما ینبغی ان یوثق بما قد تیقن انه لا یخون ابدا ایسی چیز کہ جس میں دونوں احتمالات پائے جاتے ہوں کہ کبھی صحیح ہے اور کبھی غلط تو ایسی چیز کے مقدمات اور اس سے حاصل ہونی والے نتائج پر اعتماد کرنا مناسب نہیں ہے بلکہ دلیل کا ہونا لازمی ہے اور مناسب یہ ہے کہ ٹھوس بات پر یقین کی بنیاد رکھی جائے۔ الَّذِيْ جَعَلَ لَكُمْ مِّنَ الشَّجَرِ الْاَخْضَرِ نَارًا فَاِذَآ اَنْتُمْ مِّنْهُ تُوْقِدُوْنَ 80؀ الَّذِيْ جَعَلَ لَكُمْ مِّنَ الشَّجَرِ الْاَخْضَرِ نَارًا فَاِذَآ اَنْتُمْ مِّنْهُ تُوْقِدُوْنَ 80؀ وہی ہے جس نے تمہارے لئے سبز درخت سے آگ پیدا کی پھر تم اس سے آگ سلگاتے ہو۔ اب تم آگ اور درخت ملا کر دکھاؤ؟ قال۔ جو وجود جس طرف سے بھی کھلے گا لازماً اسے انہی اجزاء سے بنا ہو ماننا پڑیگا (ص26)

  • فونٹ سائز:

    ب ب