کتاب: انسان کی عظمت کی حقیقت - صفحہ 67

انسان میں نقص بھی ہوتا ہے اور عیب بھی، یہ کونسی تجلی ہے؟ اگر کہو گے کہ یہ تجلی اللہ تعالیٰ کی ہے تو پھر نعوذ باللہ، اللہ کی تجلی ناقص اور عیب دار ٹھہرے گی۔ اور اگر یہ کہو کہ یہ تجلی کسی اور کی ہے تو پھر شرک لازم آئے گا۔ یعنی اللہ کی تجلی کے ساتھ ساتھ دوسروں کی تجلی بھی ہم پر ظاہر ہوتی ہے؟ علاوہ ازیں اندھے بہرے، مجنون اور ضعیف و کمزور کے بارے میں کیا خیال ہے؟ قال۔ ہم اس ذات صاحبِ کائنات کو کچھ بھی نہیں دے سکتے ہمارے پاس ہے ہی کیا جو اسے دیں؟فرش تا عرش ساری کائنات اسی کی پیدا کردہ ہے تو ہم کونسی چیز اٹھا کر اسے دیں۔ اور تو پھر کچھ بھی نہیں۔ فقط ہمارا سر ہی ہے اس زمین پر جھکا سکتے ہیں اور تو کچھ بھی نہیں دے سکتے یہی دے سکتے ہیں اور کیا دیں؟ (صفحہ39) وَ مِمَّا رَزَقْنٰھُمْ يُنْفِقُوْنَ Ǽ۝ۙ وَ مِمَّا رَزَقْنٰھُمْ يُنْفِقُوْنَ Ǽ۝ۙ

  • فونٹ سائز:

    ب ب