کتاب: انسان کی عظمت کی حقیقت - صفحہ 69

یہ لوگ تم پر احسان جتلاتے ہیں کہ مسلمان ہو گئے ہیں، کہہ دو کہ اپنے مسلمان ہونے کا مجھ پر احسان نہ جتلاؤ بلکہ اللہ کا تم پر احسان ہے کہ اس نے تمہیں ایمان کا راستہ دکھلایا۔ انسان حالتِ سجدہ میں اللہ تعالیٰ کے زیادہ قریب ہوتا ہے، پس سجدہ میں کثرت سے دعا کیا کرو۔ اقرب ما یکون العبد من ربه وهو ساجد فاکثرو الدعاءَ اخرجه مسلم من حدیث ابی هریرة (مشکوة باب السجود الفصل الاول من کتاب الصلاة) انسان حالتِ سجدہ میں اللہ تعالیٰ کے زیادہ قریب ہوتا ہے، پس سجدہ میں کثرت سے دعا کیا کرو۔ اقرب ما یکون العبد من ربه وهو ساجد فاکثرو الدعاءَ اخرجه مسلم من حدیث ابی هریرة (مشکوة باب السجود الفصل الاول من کتاب الصلاة) انسان حالتِ سجدہ میں اللہ تعالیٰ کے زیادہ قریب ہوتا ہے، پس سجدہ میں کثرت سے دعا کیا کرو۔ قال۔ اگر کوئی اول تا آخر خدا کے وجود کا انکار کرنے والا ہوتا تو اب تسلیم کرتا۔ (صفحہ39) اقول۔ یہ آپ کا ہمہ اوست والا عقیدہ ہے جس کی بنیاد دہریت پر رکھی ہوئی ہے جیسا کہ اوپر آپ کی گوہر افشانی سے ظاہر ہو رہا ہے۔ کی یہ دعویٰ قرآن و حدیث میں ہے؟ جو بھی عقل سلیم کے ساتھ قرآن و حدیث کا مطالعہ کرے گا اسے ان عقائد سے خلاصی حاصل

  • فونٹ سائز:

    ب ب