کتاب: انسان کی عظمت کی حقیقت - صفحہ 86

طرف پھیر دینا جہاں علی منہ کرے۔(صفحہ 51) اور لوگوں کا یہ کہنا کہ صحابہ کرام رضی اللہ عنہم نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے یہ حدیث روایت کی ہے کہ علی حق پر ہے اور حق علی کے ساتھ ساتھ رہتا ہے تاکہ جہاں علی ہو وہاں حق رہے یہ دونوں الگ الگ نہیں ہوں گے یہاں تک کہ حوض کوثر پر آکر مجھ سے ملیں گے یہ کذب اور جہالت کی انتہا ہے اس لئے کہ مذکورہ روایت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے کسی بھی صحیح یا ضعیف سند سے مروی نہیں ہے ۔ پھر یہ بات کس طرح و قوله انهم رووا جمیعا ان رسول الله صلی اللہ علیہ وسلم قال:علی مع الحق یدور معه حیث دار ولن یتفرقا حتی یردا علی الحوض .من اعظم الکلام کذبا وجهلا فان هذا الحدیث لم یروه احد عن النبی صلی اللہ علیہ وسلم لا باسناد صحیح ولا ضعیف فکیف یقال ’’انهم جمیعا رووا هذا الحدیث‘‘وهل یکون اکذب ممن یروی عن الصحابة والعلماء انهم رووا حدیثا، والحدیث لا یعرف عن احد منهم اصلا، بل هذا من اظهر الکذب ولو قیل رواه بعضهم و کان یمکن صحته لکان ممکنا وهو کذب قطعا علی النبی صلی اللہ علیہ وسلم وینزه عنه رسول الله صلی اللہ علیہ وسلم و ایضا فالحق لا یدور مع شخص غیر النبی صلی اللہ علیہ وسلم ولو دار الحق مع علی حیثما دار لوجب ان یکون معصوما کالنبی صلی اللہ علیہ وسلم . اور لوگوں کا یہ کہنا کہ صحابہ کرام رضی اللہ عنہم نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے یہ حدیث روایت کی ہے کہ علی حق پر ہے اور حق علی کے ساتھ ساتھ رہتا ہے تاکہ جہاں علی ہو وہاں حق رہے یہ دونوں الگ الگ نہیں ہوں گے یہاں تک کہ حوض کوثر پر آکر مجھ سے ملیں گے یہ کذب اور جہالت کی انتہا ہے اس لئے کہ مذکورہ روایت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے کسی بھی صحیح یا ضعیف سند سے مروی نہیں ہے ۔ پھر یہ بات کس طرح و قوله انهم رووا جمیعا ان رسول الله صلی اللہ علیہ وسلم قال:علی مع الحق یدور معه حیث دار ولن یتفرقا حتی یردا علی الحوض .من اعظم الکلام کذبا وجهلا فان هذا الحدیث لم یروه احد عن النبی صلی اللہ علیہ وسلم لا باسناد صحیح ولا ضعیف فکیف یقال ’’انهم جمیعا رووا هذا الحدیث‘‘وهل یکون اکذب ممن یروی عن الصحابة والعلماء انهم رووا حدیثا، والحدیث لا یعرف عن احد منهم اصلا، بل هذا من اظهر الکذب ولو قیل رواه بعضهم و کان یمکن صحته لکان ممکنا وهو کذب قطعا علی النبی صلی اللہ علیہ وسلم وینزه عنه رسول الله صلی اللہ علیہ وسلم و ایضا فالحق لا یدور مع شخص غیر النبی صلی اللہ علیہ وسلم ولو دار الحق مع علی حیثما دار لوجب ان یکون معصوما کالنبی صلی اللہ علیہ وسلم . اور لوگوں کا یہ کہنا کہ صحابہ کرام رضی اللہ عنہم نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے یہ حدیث روایت کی ہے کہ علی حق پر ہے اور حق علی کے ساتھ ساتھ رہتا ہے تاکہ جہاں علی ہو وہاں حق رہے یہ دونوں الگ الگ نہیں ہوں گے یہاں تک کہ حوض کوثر پر آکر مجھ سے ملیں گے یہ کذب اور جہالت کی انتہا ہے اس لئے کہ مذکورہ روایت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے کسی بھی صحیح یا ضعیف سند سے مروی نہیں ہے ۔ پھر یہ بات کس طرح

  • فونٹ سائز:

    ب ب