کتاب: اسلام اور مستشرقین - صفحہ 68
clear therefore that there is some connexion between these lines and the similar verses of the Qur'an.: ٹزڈال نے اپنے دعویٰ کے اثبات میں کچھ ایسے اشعار بھی نقل کیے ہیں کہ جن میں قرآن مجید کے اسلوب کلام سے مشابہت پائی جاتی ہے،مثلاًٹزڈال کے بقول اُمیہ کے اشعار ہیں: ویوم موعدہم أن یحشروا زمرا.. یوم التغابن إذ لا ینفع الحذر مستوسقین مع الداعی کأنہم..رجل الجراد زفتہ الریح منتشر وأبرزوا بصعید مستوجرز..وأنزل والمیزان والزبر فمنہم فرح راض بمبعثہ..وآخرون عصوا مأواہم سقر یقول خزانہا ما کان عندکم..ألم یکن جاء کم من ربکم نذر قالوا: بلی فتبعنا فتیة بطروا..وعزنا طول ہذا العیش والعمر28 اسی طرح ٹزڈال نے کہا ہے کہ امرؤ القیس کے درج ذیل اشعار کے بارے میںیہ دعویٰ کیا جاتا ہے کہ پیغمبر اسلام eنے سورۃ القمر کے مضامین ان سے اخذ کیے ہیں: دنت الساعة وانشق القمر..عن غزال صاد قلبی ونفر أحور قد حرت فی أوصافہ..ناعس الطرف بعینہ حور مر یوم العید فی زینتہ..فرمانی فتعاطی فعقر بسہام من لحاظ فاتک..فترکنی کہشیم المحتظر وإذا ما غاب عنی ساعة..کانت الساعة أدہی وأمر کتب الحسن علی وجنتیہ..بسحیق المسک سطرا مختصر عادة الأقمار یسری فی الدجی..فرأیت اللیل یسری بالقمر بالضحی واللیل من طرفہ..فرقہ ذا النورکم شیء زہر قلت إذا شق العذار خدہ.دنت الساعة وانشق القمر29 درج ذیل اشعار کو بھی امرؤ القیس کے اشعار قرار دیتے ہوئے انہیں قرآن کا ماخذ قرار دیا گیاہے: أقبل والعشاق من خلفہ..کأنہم من کل حدب ینسلون وجاء یوم العید فی زینتہ..لمثل ہذا فلیعمل العاملون30