کتاب: طلاق کے مسائل - صفحہ 100

أَحْـــــکَامُ الْـــحَضَـــانَۃِ بچے کی تربیت کے مسائل مسئلہ نمبر153:طلاق کی صورت میں اولاد پر باپ کا حق ہوتا ہے ، ماں کا نہیں ۔ مسئلہ نمبر154:مرد اور عورت میں طلاق کے بعد بچے کی تربیت پر ماں کا حق سب سے زیادہ ہے۔ مسئلہ نمبر155:عورت ، دوسرا نکاح کرلے ، تو اس کا حق حضانت از خود ختم ہوجاتا ہے۔ عَنْ عَبْدِاللّٰہِ بْنِ عَمْرٍو رَضِیَ اللّٰہُ عَنْہُمَا اَنَّ امْرَأَۃً قَالَتْ : یَا رَسُوْلَ اللّٰہِ صلی اللہ علیہ وسلم اِنَّ ابْنِیْ ہٰذَا کَانَ بَطَنِیْ لَہٗ وِعَائً وَ ثَدْیِیْ لَہٗ سِقَائً وَ حِجْرِیْ لَہٗ حِوَائَ وَ اِنَّ اَبَاہُ طَلَّقَنِیْ وَ اَرَادَ اَنْ یَنْتَزِعَہٗ مِنِّیْ فَقَالَ لَہَا رَسُوْلُ اللّٰہِ صلی اللہ علیہ وسلم (( اَنْتِ اَحَقُّ بِہٖ مَا لَمْ تُنْکِحِیْ)) رَوَاہُ اَبُوْدَاؤٗدَ (حسن) حضرت عبداللہ بن عمرو رضی اللہ عنہما سے روایت ہے کہ ایک عورت نے عرض کیا ’’یا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم ! یہ میرا بیٹا ہے ، میرا پیٹ اس کے لئے پناہ اور میری چھاتی اس کے لئے مشکیزہ اور میری گود اس کے لئے گہوارہ تھی ، اب اس کے باپ نے مجھے طلاق دے دی ہے اور بچہ مجھے چھیننا چاہتا ہے ۔‘‘ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے اس سے ارشاد فرمایا ’’جب تک (دوسرا ) نکاح نہ کرے بچے کی حضانت کی تو زیادہ حقدار ہے۔‘‘ اسے ابوداؤد نے روایت کیا ہے۔ مسئلہ نمبر156:اگر والد ، بچے کو مطلقہ والدہ کا دودھ پلانا چاہے تو باہمی رضامندی سے اس کا معاوضہ طے کر لینا چاہئے۔

  • فونٹ سائز:

    ب ب