کتاب: متنازعہ مسائل کے قرآنی فیصلے - صفحہ 1

کتاب: متنازعہ مسائل کے قرآنی فیصلے مصنف: مجلس التحقیق الاسلامی پبلیشر: مجلس التحقیق الاسلامی ترجمہ: زیر نظر کتاب میں بعض اختلافی مسائل کے بارے میں قرآنی آیات پیش کی گئی ہیں جن سے اختلاف کاواضح فیصلہ ہوجاتا ہے اس سلسلہ میں عقیدہ کے چار اہم مسائل یعنی مسئلہ علم غیب ،مسئلہ حاضر وناظر،غیراللہ کی پرستش اور سفارش او رمسئلہ مختار کل پرروشنی ڈالی گئی ہے ۔ بسم الله الرحمن الرحیم متنازعہ مسائل کے قرآنی فیصلے علم غیب صرف اﷲ کیلئے خاص ہے سورۃ البقرۃ قَالُوْا سُبْحٰــنَكَ لَاعِلْمَ لَنَآ اِلَّا مَا عَلَّمْتَنَا ۭ اِنَّكَ اَنْتَ الْعَلِيْمُ الْحَكِيْمُ 32؀ ان سب نے کہا کہ اے اللہ !تیری ذات پاک ہے ہمیں تو صرف اتنا ہی علم ہے جتنا تو نے ہمیں سکھارکھا ہے ، پورے علم و حکمت والا تو تُو ہی ہے ۔ فَاَزَلَّهُمَا الشَّيْطٰنُ عَنْهَا فَاَخْرَجَهُمَا مِمَّا كَانَا فِيْهِ ۠ وَقُلْنَا اھْبِطُوْا بَعْضُكُمْ لِبَعْضٍ عَدُوٌّ ۚ وَلَكُمْ فِى الْاَرْضِ مُسْـتَقَرٌّ وَّمَتَاعٌ اِلٰى حِيْنٍ 36؀ لیکن جب شیطان نے ان کو بہکا کر وہاں سے نکلوا ہی دیا اور ہم نے کہہ دیا کہ اتر جاؤ ! تم ایک دوسرے کے دشمن ہو اور ایک وقت مقرر تک تمہارے لیے زمین میں ٹھہرنا اور فائدہ اٹھا نا ہے ۔ شیطان نے جنت میں داخل ہو کر روبروا نہیں بہکایا، یا وسوسہ اندازی کے ذریعے سے، اس کی بابت کوئی صراحت نہیں۔ تاہم یہ واضح ہے کہ جس طرح سجدے کے حکم کے وقت اس نے حکم الٰہی کے مقابلے میں قیاس سے کام لے کر (کہ میں آدم سے بہتر ہوں) سجدے سے انکار کیا، اسی طرح اس موقعے پر اللہ تعالیٰ کے حکم (وَلَا تَـقْرَبَا) کی تاویل کر کے آدم علیہ السلام کو پھسلانے میں کامیاب ہو گیا، جس کی تفصیل سورۂ اعراف میں آئے گی۔ گویا حکم الٰہی کے مقابلے میں قیاس اور نص کی دوراز کار تاویل کا ارتکاب بھی سب سے پہلے شیطان نے کیا۔(فَنَعُوْذُ بِاللّٰهِ مِنْ هٰذَا) فنعوذ باللّٰه مِنْ هٰذَا)

  • فونٹ سائز:

    ب ب