کتاب: نماز میں ہاتھ باندھنے کا حکم اور مقام - صفحہ 34

ابوتوبہ الربیع بن نافع الحلبی (تقریب التہذیب : ۱۹۰۳( ثقۃ حجۃ عابد یہ صحیح بخاری و صحیح مسلم کے راوی اور ثقہ بالاتفاق ہیں۔ الہیثم بن حمیداس تعدیل کے مقابلے میں ابو مسہر کا قول ہے کہ (کتاب القرات خلف الامام للبیہقی ص ۶۲( "وھٰذا اسناد صحیح ورواتہ ثقات" ۱۰۔ (تقریب التہذیب: ۷۳۶۲(: صدوق رمی بالقدر . ابن حجر محمد بن مہاجر ہیثم بن حمید کو طلب علم کے ساتھ پہچانتے تھے۔ (تاریخ ابو زرعہ : ۹۰۱ وسندہ صحیح( اس تعدیل کے مقابلے میں ابو مسہر کا قول ہے کہ (کتاب القرات خلف الامام للبیہقی ص ۶۲( "وھٰذا اسناد صحیح ورواتہ ثقات" ۱۰۔ (تقریب التہذیب: ۷۳۶۲(: صدوق رمی بالقدر . ابن حجر محمد بن مہاجر ہیثم بن حمید کو طلب علم کے ساتھ پہچانتے تھے۔ (تاریخ ابو زرعہ : ۹۰۱ وسندہ صحیح( اس تعدیل کے مقابلے میں ابو مسہر کا قول ہے کہ " کان ضعیفا ً قدریا ً" یہ قول جمہور محدثین کے خلاف ہونے کی وجہ سے ضعیف ہے۔ ثور بن یزید بن زیاد الکلاعی ابو خالد الحمصی ابن سعد، محمد بن اسحاق، دحیم، احمد بن صالح، یحییٰ بن معین ، یحییٰ بن سعید ، محمد بن عوف ، نسائی ، ابوداؤد اور العجلی نے کہا: ثقہ ہے۔ ابن حبان نے ثقہ لوگوں میں اس کا ذکر کیا۔ ساجی اور ابوحاتم نے کہا: صدوق۔ ابن عدی نے کہا: "ھو مستقیم الحدیث صالح فی الشامیین"(تہذیب التہذیب ج۲ ص ۳۰،۳۲ ملخصا(

  • فونٹ سائز:

    ب ب