کتاب: روزہ حقیقت و ثمرات - صفحہ 39

یعنی( افطارکے وقت روزہ دار کی دعا ردنہیں ہوتی ۔)یہ ایک ایسی فضیلت ہے جو بندئہ مومن کیلئے سب سے بڑی بشارت قرار دی جاسکتی ہے ۔ روزہ دار کو دوسری خوشی اس وقت لاحق ہوگی جب وہ اپنے پروردگار سے ملاقات کرے گا،مرنے کے بعد انسان سب سے زیادہ مدد اور سہارے کا محتاج ہوتا ہے،روزہ کا اجر چونکہ محفوظ رہتا ہے حتی کہ اصحابِ حقوق بھی وہ اجر نہیں لے سکتے،اور وہ اجر بھی بے حد وحساب ہے تو یہ چیز یقینا اسے خوش کردے گی، اللہ تعالیٰ کا فرمان ہے:{وَمَا تُقَدِّ مُوْا لِأَنْفُسِکُمْ مِنْ خَیْرٍ تَجِدُوْہُ عِنْدَ اللہ ھُوَ خَیْرًا وَّأَعْظَمَ اَجْرًا}

  • فونٹ سائز:

    ب ب