کتاب: توحید اسماء و صفات - صفحہ 109

 (۶) اہلِ تعطیل کے مذہب کے باطل ہونے کی چھٹی وجہ یہ ہے کہ ان کے مذہب کو مان لینے سے کچھ باطل چیزیں لازم آتی ہیں،اور لازم کا باطل ہونا ملزوم کے باطل ہونے پر دلالت کرتا ہے۔ جو باطل امور لازم آرہے ہیں ان میں سے کچھ درج ذیل ہیں : (۱) اہلِ تعطیل نے نصوصِ صفات کو ان کے ظاہری معنی سے محض اپنے اس عقیدہ کی بناء پر پھیرا کہ ان نصوص کا ظاہری معنی مراد لینے سے خالق کی مخلوق سے تشبیہ لازم آتی ہے۔ ہم یہ کہتے ہیں کہ تم نے اللہ تعالیٰ اور اسکے رسول صلی اللہ علیہ وسلم کے کلام کے ظاہری معنی سے تشبیہ کا معنی کہاں سے نکال لیا ،اللہ تعالیٰ کی مخلوق کے ساتھ تشبیہ کا عقیدہ تو کفر ہے ،کیونکہ عقیدئہ تشبیہ اللہ تعالیٰ کے اس فرمان کی تکذیب ہے :[ لَيْسَ كَمِثْلِہٖ شَيْءٌ۝۰ۚ]  یعنی: اس جیسی کوئی چیز نہیں ہے۔ نعیم بن حماد الخزاعی، جو امام بخاری رحمہ اللہ کے مشائخ میں سے ہیںفرماتے ہیں: ’’ جو اللہ تعالیٰ کو اس کی مخلوق کے ساتھ تشبیہ دے اس نے کفر کیا ،اور جس نے ان صفات میں سے کسی صفت کا انکار کیا جو اس نے اپنی ذات کیلئے بیان فرمائی ہیں اس نے بھی کفر کیا ،اور اللہ تعالیٰ نے اپنی ذات کی جو صفات بیان کردیں ،یا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے اللہ تعالیٰ کی جو صفات بیان کردیں ،ان میں تشبیہ نہیں ہے ‘‘  اور یہ بات معلوم ہے کہ اللہ تعالیٰ اور اسکے رسو ل صلی اللہ علیہ وسلم کے کلام کو تشبیہ اورکفر پر محمول کرنا سب سے بڑا باطل ہے ۔

  • فونٹ سائز:

    ب ب