کتاب: توحید اسماء و صفات - صفحہ 121

 دوسری،’’ تمام بندوں کے دل رحمن کی انگلیوں میں سے دو انگلیوں کے بیچ میں ہیں‘‘۔ تیسری،’’میں رحمن کا نفَس ،یمن کی طرف سے پاتاہوں‘‘ ۔ اس کلام کو شیخ الاسلام ابن تیمیہ رحمہ اللہ نے مجموع الفتاویٰ (ص:۳۹۸) میں نقل فرمایاہے، اور کہا ہے کہ : یہ حکایت امام احمد بن حنبل پر کذب وافتراء ہے ۔ ہم ان تینوں مثالوں پر تفصیلی کلام کرتے ہیں : پہلی مثال :[الحجر الأسود یمین ﷲ فی الارض ] یعنی حجر اسود زمین پر اللہ تعالیٰ کا دایاں ہاتھ ہے ۔ اس کا جواب یہ ہے کہ یہ حدیث باطل ہے،اورنبی صلی اللہ علیہ وسلم سے ثابت نہیں ہے۔ اما م ابن الجوزی ’’ العلل المتناھیہ‘‘ میں فرماتے ہیں :یہ حدیث صحیح نہیں ہے ۔ حافظ ابن العربی فرماتے ہیں:یہ حدیث باطل اور ناقابلِ التفات ہے ۔ ابن تیمیہ فرماتے ہیں: یہ حدیث نبی صلی اللہ علیہ وسلم سے ایک ایسی سند سے مروی ہے جو ثابت نہیں ۔ جب یہ حدیث باطل ٹھہری تو پھراس کے معنی میں غور وخوض کی کوئی ضرورت نہ رہی ،تاہم شیخ الاسلام ابن تیمیہ رحمہ اللہ فرماتے ہیں : اس بارہ میں مشہور بات عبداللہ بن عباس سے مروی ایک اثر ہے ،وہ فرماتے ہیں: ’’ حجر اسود زمین میں اللہ تعالیٰ کادایاں ہاتھ ہے جس نے اس سے مصافحہ کیا یا بوسہ دیا اس

  • فونٹ سائز:

    ب ب